وومن یونیورسٹی صوابی میں طالبات کو قدرتی آفات کے دوارن رپورٹنگ پر تربیت دی گئی

Women-swabi 16

صوابی (اسد صوابی )وومن یونیورسٹی صوابی میں طالبات کو قدرتی آفات کے دوارن رپورٹنگ پر تربیت دی گئی۔ہلال احمر نےاور آئی سی آر سی نے وومن یونیورسٹی صوابی میں شعبہ صحافت کے تعاون سے طالبات کے لیے معلوماتی ایک روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد کیا۔ ورکشاپ کا مقصد صحافت، مینجمنٹ سائنس، اردو، پاک اسٹڈیز، اور سائیکالوجی سمیت مختلف شعبوں کی طالبات کو بحرانوں اور آفات کے وقت موثر طریقے سے معلومات پہنچانے پر تربیت دی گئی تقریب میں مقررین نے آفات کے دوران میڈیا اور مواصلات کے اہم کردار پرروشنی ڈالی اعزاز الرحمان، ICRC کمیونیکیشن لیڈ، نے بحران کے حالات میں درست اور بروقت رابطے کی اہمیت پر زور دیا ہلال احمر کے کمیونیکیشن اینڈ میڈیا منیجر ذیشان انور نے آفات کے دوران اہم معلومات کی ترسیل میں انسانی ہمدردی کی تنظیموں کے منفرد چیلنجز اور ذمہ داریوں پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے متاثرہ کمیونٹیز کے ساتھ مؤثر طریقے سے جڑنے کے لیے واضح اور ہمدردانہ کہانی سنانے کی ضرورت پر زور دیا۔فاطمہ شاہ، کمیونیکیشن آفیسر، نے مجبور انسانی مواد تیار کرنے کے لیے حکمت عملیوں اور بہترین طریقوں کی مزید وضاحت کی۔ انہوں نے آفات کے انسانی اثرات کو پہنچانے میں ہمدردی اور اخلاقی رپورٹنگ کی اہمیت پر زور دیا۔ریلیف مینیجر اشفاق احمد نے امدادی کارروائیوں کے عملی پہلوؤں اور بحرانوں کے دوران ہم آہنگی اور امداد کی ترسیل کو آسان بنانے میں میڈیا کے اہم کردار پر روشنی ڈالی۔وومن یونیورسٹی صوابی کے شعبہ صحافت کے سربراہ وسیم خٹک نے ہنگامی حالات میں ذمہ دار رابطہ کار کے طور پر کام کرنے کے لیے طالب علموں کو علم اور ہنر سے آراستہ کرنے کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے طالبات کی حوصلہ افزائی کی کہ وہ سیکھے گئے کام کو اپنے متعلقہ شعبوں میں لاگو کریں۔ ورکشاپ نے طالبات کو آفات کے دوران انسانی ہمدردی کی کمیونیکیشن اور میڈیا مینجمنٹ کی دنیا کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کا ایک انمول موقع فراہم کیا۔بعد ازاں طالبات میں سرٹیفیکیٹ تقسیم کئے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں