عارف علوی سے میری اور پھر آرمی چیف کی ملاقات۔۔معاملات آگے بڑھانے کےلئے کام ہوگا۔۔محمد علی درانی

Muhammad-ali-durrani-interview 45

سابق وفاقی وزیر اطلاعات محمد علی درانی نےنجی ٹی وی کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ جمعہ کو پہلے سی بی ایمز اعتماد کی بحالی کے نکات کا اعلان کروں گا، یہ سی بی ایمز ان لوگوں کی ترجمانی کریں گے، جوتحریک انصاف میں ہیں اور کرائسز میں ہیں۔
محمد علی درانی نے بتایا کہ عارف علوی سے میری اور پھر آرمی چیف سےملاقات کےبعدحالات میں بہتری آئی، آئندہ چند دنوں میں انہی کی طرف سے معاملات کو آگے بڑھانےکیلئےکام ہوگا.
سابق وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ شہبازشریف سے جیل میں ملاقات کی تو کہا آپ کو فوج سے نہیں لڑنا چاہیے، جو مؤقف شہبازشریف کا تھا اسی طرح کا مثبت مؤقف عارف علوی کا ہے، شہبازشریف نےکہامیں پارٹی قیادت کا پابند ہوں تومیں نےکہا ہم بھی حق بات کے پابند ہیں، سیاستدان پر کراس صرف عوام لگا سکتے ہیں۔
بلاول کے بیانات سے متعلق انھوں نے کہا کہ بلاول کو والد سے معذرت کرنی چاہیے وہ جیسا بھی ہے ملک کا صدر رہا ہے، میرے ان سے اختلافات اپنی جگہ میں مر کر بھی ان کی جماعت میں نہ جاؤں۔
محمد علی درانی نے مزید کہا کہ لوگ مجھے کہتےہیں کہ تم صلح کراتے کراتے آخری نوابزادہ نصراللہ بن رہےہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں