پشاورہائی کورٹ میں خیبرپختونخوا کی تاریخ میں پہلی خاتون چیف جسٹس تعینات

Peshawar-High-court-New-CJ 72

پشاور: پشاورہائی کورٹ میں خیبرپختونخوا کی تاریخ میں پہلی خاتون چیف جسٹس تعینات،جسٹس مسرت ہلالی نے اپنے عہدے کا حلف اٹھا لیا۔ جسٹس مسرت ہلالی 8 اگست 1961 کو پشاورمیں پیدا ہوئیں۔ خیبرلا کالج سے قانون کی ڈگری حاصل کرنے کے بعد 1983 میں وکالت کا آغاز کیا۔جس کے بعد 1988 میں ہائی کورٹ جبکہ 2006 میں سپریم کورٹ کا لائسنس بھی حاصل کر لیا۔ جسٹس مسرت ہلالی نے 2007 کی وکلا آزادی تحریک میں مرکزی کردارادا کیا۔۔۔تحریک میں گرفتاری کے دوران انکی ٹانگ بھی ٹوٹ گئی تھی۔ جسٹس مسرت ہلالی کوپشاورہائی کورٹ کی نائب صدرہونے کے ساتھ خیبرپختو نخوا کی پہلی خاتون ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل تعینات ہونے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔ خواتین وکلا نے جسٹس مسرت ہلالی کی بطورپہلی خاتون چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ تعیناتی کو خوش آئیند قرار دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں