شادی کیلئے لڑکے کا عمر میں لڑکی سے بڑا ہونا ضروری نہیں: سنیتا مارشل

sunita-marshall-actress 57

کراچی :پاکستان شوبز کی اداکارہ سنیتا مارشل کا کہنا ہے کہ یہ لازمی نہیں کہ شادی کیلئے لڑکا ہی لڑکی سے عمر میں بڑا ہو، لڑکی بھی بڑی ہو سکتی ہے۔ حال ہی میں سنیتا مارشل نے ہمارے معاشرے میں شادی کیلئے بڑی عمر کی لڑکی کے انتخاب کو برا سمجھے جانے پر اپنی رائے کا اظہار کیا۔ اداکارہ کا کہنا تھا کہ یہ ہمارے معاشرے میں ایک خوف کی علامت بنا دیا گیا ہے کہ کم عمر لڑکے کی بڑی عمر کی لڑکی سے شادی نہیں کی جاتی۔ سنیتا مارشل کا کہنا تھا کہ یہ ضروری نہیں کہ لڑکا عمر میں بڑا اور لڑکی چھوٹی ہو اس کا شادی کامیاب ہونے سے کوئی تعلق نہیں البتہ خواتین گھریلو معاملات میں زیادہ سمجھدار ہوتی ہیں اور وہ اگر بڑی عمر کی ہوں تو شادی کی کامیابی کے زیادہ نتائج دکھائی دیں گے۔ سنیتا مارشل نے انٹرویو میں گفتگو کے دوران انکشاف کیا کہ وہ بھی اپنے شوہر سے عمر میں ایک سال بڑی ہیں اور اس سے ان کی شادی یا ان کے شوہر پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔ اداکارہ نے عورت کے بانجھ پن کے حوالے سے بات کرتے ہوئے اسے بھی ایک المیہ قرار دیا کہ ہمارے ہاں اگر عورت بانجھ ہو تو سب کو بتایا جاتا ہے لیکن اگر مرد میں یہ مسئلہ ہو تو اسے چھپا لیا جاتا ہے۔ یاد رہے کہ سنیتا مارشل پاکستان شوبز کے اداکار حسن احمد کی اہلیہ ہیں۔ اس خوبصورت جوڑی نے 2009 میں پسند سے شادی کی اور ان کے دو بچے بھی ہیں۔ سنیتا مارشل ان دِنوں نئے ڈرامے پنجرہ اور مختصر سیریز سرِراہ میں بااختیار عورت کا کردار نبھاتی نظر آ رہی ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں