اسرائیلی میڈیا کا ایران کیخلاف حکومت کی ناکامی کا اعتراف

Isreal-and-iran-war 65

تل ابیب :صیہونی میڈیا کا کہنا ہے کہ اسرائیل، ایران کے خلاف فوجی کارروائی کرنے کی توانائی نہیں رکھتا‘تل ابیب کے میزائل 10 دنوں کے اندر ہی ختم ہو جائیں گے۔صیہونی حکومت کے چینل-13 نے اپنی ایک رپورٹ میں اس بات کا اعتراف کرتے ہوئے کہ فلسطینی مزاحمتی تنظیموں کے ساتھ حالیہ جنگ میں تل ابیب کے میزائل ڈپو خالی ہو گئے تھے، زور دیا کہ بنیامین نتن یاہو میں ایران کے خلاف فوجی کارروائی کی توانائی نہ کبھی تھی اور نہ ہی ہوگی۔صیہونی چینل-13 نے باخبر افراد کے حوالے سے جنہیں اس نے “سفارتی ذرائع” قرار دیا ہے، خبر دی ہے کہ اسرائیل، ایران پر حملہ کرنے کے لیے تیار نہیں ہے۔یہ رپورٹیں ایسے وقت میں شائع ہوئی ہیں کہ جب تل ابیب نے پہلے ایران پر فوجی حملے کے امکان پر زور دیا تھا اور اب میڈیا اس منظر نامے اور اس کے اہداف کے بارے میں شکوک و شبہات کا شکار ہے۔المیادین چینل کی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، صیہونی حکومت کے چینل- 13 کے خارجہ تعلقات کے تجزیہ نگار گیل تماری نے اس چینل کے اینکر کے اس سوال کا جواب دیتے ہوئے کہ کیا اسرائیل ایران پر حملہ کرنے کے لیے تیار ہے؟ کہا کہ ایک سینئر سفارتی ذریعہ جس سے ہم نے بات کی، اس نے ہمیں بتایا کہ نتن یاہو کے دعووں کے بارے میں ہماری سمجھ یہ ہے کہ اسرائیل اب ایران پر حملہ کرنے کے لیے تیار نہیں ہے اور ایران کے جوہری پروگرام کو روکنے کے لیے اس کے پاس کوئی موثر فوجی آپشن نہیں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں