ایلون مسک کی ذاتی دولت میں 182سے 200ارب ڈالرز کی کمی

Elevn-musk-technology 87

نیو یارک:ٹیسلا، اسپیس ایکس اور ٹوئٹر کے مالک ایلون مسک نے ایک ایسا گنیز ورلڈ ریکارڈ اپنے نام کرلیا جو کوئی بھی قائم کرنا پسند نہیں کرے گا،ایلون مسک کی ذاتی دولت میں 182سے 200ارب ڈالرز کی کمی آنے کو گنیز ورلڈ ریکارڈز نے ایک عالمی ریکارڈ قرار دیا ہے،اس سے پہلے یہ ریکارڈ جاپانی ارب پتی ماسوشی سن کے پاس تھا جو 2000میں 58.6ارب ڈالرز سے محروم ہوئے تھے،گنیز ورلڈ ریکارڈز نے ایک بلاگ پوسٹ میں ایلون مسک کے حصے میں آنے والے عالمی ریکارڈ کے بارے میں بتایا،بلاگ پوسٹ میں امریکی جریدے فوربز کے اعدادوشمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا کہ 2021 کے آخر میں ایلون مسک کی دولت 320ارب ڈالرز تک پہنچ گئی تھی مگر 2023کے آغاز پر وہ گھٹ کر 134ارب ڈالرز ہوگئی،گنیز ورلڈ ریکارڈز نے کہا کہ فوربز کے تخمینے کے مطابق ایلون مسک نومبر 2021کے بعد سے 182ارب ڈالرز سے محروم ہوچکے ہیں مگر دیگر ذرائع کے مطابق ان کی دولت میں 200 ارب ڈالرز کی کمی آئی ہے،بلاگ پوسٹ میں کہا گیا کہ حقیقی اعدادوشمار کی تصدیق کرنا تو لگ بھگ ناممکن ہے مگر ایلون مسک اس حوالے سے سابقہ ریکارڈ توڑ چکے ہیں جو 2000میں ماسوشی سن نے قائم کیا تھا،اس سے قبل 2023کے آغاز میں بلومبرگ کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ نومبر 2021میں ایلون مسک کی دولت ریکارڈ 340ارب ڈالرز تک پہنچی مگر 2022کے اختتام پر وہ گھٹ کر 137ارب ڈالرز تک پہنچ گئی،اس کی وجہ 2022کے دوران ٹیسلا کے حصص کی مالیت میں 65فیصد کمی آنا ہے،اسی طرح انہوں نے اکتوبر میں 44ارب ڈالرز میں ٹوئٹر کو بھی خریدا،اس سے قبل دسمبر 2022میں ایلون مسک سے دنیا کے امیر ترین شخص کا اعزاز فرانس کے برنارڈ آرنلٹ نے چھین لیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں