شرجیل میمن کا سندھ میں آٹے کی فراہمی سے متعلق انوکھا دعویٰ

Sharjeel-Memon 60

کراچی:وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے دعویٰ کیا ہے کہ ہم گندم مہنگی خرید کر عوام کو سستا آٹا فراہم کر رہے ہیں، آٹے کا بحران پورے ملک میں ہے، اوپن مارکیٹ میں مہنگے آٹے کو سستا کرنے کے لیے وزیر خوراک کو ہدایت دی گئی ہے،انہوں نے کہا کہ ہر روز 6لاکھ آٹے کی بوریاں 65روپے فی کلو میں فروخت کی جا رہی ہیں، فلور ملز کے لیے گندم کا کوٹا بڑھا دیا گیا ہے، سندھ حکومت کے اقدامات کے بعد اوپن مارکیٹ میں آٹا 95روپے فی کلو میں دستیاب ہو گا،شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ حکومت گندم کا ذخیرہ اس لیے کرتی ہے کہ گندم کی کمی کو پورا کیا جاسکے، گندم کو اسمگل ہونے سے بچایا جاتا ہے، اگر حکومت گندم ذخیرہ نہ کرتی تو گندم اور آٹے کا بحران مزید سنگین ہو سکتا تھا، غیرقانونی طور پر گندم ذخیرہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی،انہوں نے کہا کہ ایک صوبے سے دوسرے صوبے میں گندم کی نقل و حرکت پر پابندی نہیں، صورتحال کے مطابق پابندی لگائی جا سکتی ہے،اس موقع پر صوبائی وزیر مکیش کمارچاولہ نے کہا کہ فلور ملز کے لیے گندم کا کوٹا بڑھایا گیا ہے، سندھ حکومت کی جانب سے 65روپے فی کلو والے آٹے کی فراہمی بھی جاری رہے گی،چوہدری یوسف کا کہنا تھا کہ ہم بھی چاہتے ہیں کہ آٹا سستا ملے اور غریبوں کو لائن میں نہ لگنا پڑے، صورتحال بہتر ہونے میں 2 سے 3 روز لگیں گے مگر اب آٹا 95روپے کلو ملے گا،انہوں نے کہا کہ پورے پاکستان میں صورت حال بہت خراب ہے اور آٹا مہنگا ہے، سندھ میں آٹا پورے ملک کے مقابلے میں سستا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں