چیف الیکشن کمشنر نے بلدیاتی انتخابات سے متعلق بڑا فیصلہ کر لیا

ECP notice CM kp and other ministers 54

اسلام آباد: چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا نے کہا ہے کہ کوئی صوبائی حکومت بلدیاتی انتخابات کرانا نہیں چاہتی۔چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے الیکشن کمیشن پنجاب میں بلدیاتی انتخابات سے متعلق کیس کی سماعت کی، اس موقع پر سپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے بتایا کہ پنجاب میں دو بار حلقہ بندیاں کر چکے ہیں اب تیسری مرتبہ حلقہ بندی کرنی ہو گی، رولز کی کاپی درکار ہے، چیف سیکرٹری پنجاب نے سماعت کے دوران بتایا کہ جلد ہم ڈی مارکیشن کر لیں گے، 25 ہزار آبادی پر حلقہ بن جائے گا۔سکندر سلطان راجا نے کہا کہ پنجاب حکومت ہمیں درکار دستاویزات فراہم کرے، پنجاب میں تیسری مرتبہ بلدیاتی حلقہ بندی مذاق نہیں ہے، اگر الیکشن کمیشن پرانے قانون پر بلدیاتی انتخابات کرا سکتا ہوا تو آج ہی پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کا شیڈول جاری کر دیں گے، نئے قانون پر بلدیاتی انتخابات کرانے ہیں تو چیف سیکرٹری صاحب ہمیں یقین دہانی کرائیں۔انہوں نے کہا کہ کوئی حکومت بلدیاتی انتخابات نہیں کرانا چاہتی، سیکرٹری الیکشن کمیشن آج آپ سپریم کورٹ کو دوبارہ خط لکھیں، اب الیکشن کمیشن چیف سیکرٹری کو ہدایت کرے گا اور آرڈر پاس کریں گے، چیف سیکرٹری پنجاب نے بتایا کہ صوبائی اسمبلی نے نیا بل منظور کر لیا ہے، وہ 10 دن میں قانون بن جائے گا، نئے قانون کے مطابق چلیں، ہم ٹائم لائن کو فالو کریں گے۔چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ آپ کو لگتا ہے کہ الیکشن ای وی ایم پر ہو سکتا ہے، آپ جان بوجھ کر ای وی ایم ڈال رہے ہیں کہ مسئلہ بنے، یہ جان بوجھ کر سٹنٹ ہے، آپ کو اپنی سیاسی قیادت کو گائیڈ کرنا چاہیے، پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے ہم آرڈر پاس کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں